کلونجی کے استعمال کا درست طریقہ جان لیں، اس کا استعمال کن کن طریقوں سے کیا جاسکتا ہے

کلونجی میں وٹامنز، امینیو ایسڈز، پروٹینز، فیٹی ایسڈز ، آئرن، پوٹاشیم، کیلشیئم اور طاقتور اینٹی آکسائیڈنٹ Thymoquinone پی کے ٹپس! پایا جاتا ہے جن کی وجہ سے کلونجی کینسر جیسے مرض میں بھی مفید سمجھی جاتی ہے۔کھانسی، قبض، یرقان، سر درد، وزن میں کمی، یاد داشت تیز، بالوں کے مسائل، کیل مہاسے دور کرنے، جوڑوں کا درد، بلڈ پریشر، دانت کا درد، گردے، کینسر اور دل کی صحت ان تمام مسائل میں کلونجی کارآمد ثابت ہوتی ہے

۔آج ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ کلونجی کو استعمال کرنے کا صحیح طریقہ کیا ہے، کیونکہ ہر شخص اپنے حساب سے کھاتا ہے اور پھر فائدہ نہ ہونے کی صورت میں اسے بیکار سمجھ بیٹھتا ہے۔٭ کلونجی کے سات دانے یا ایک چمچ ہی استعمال کریں اس سے زیادہ نہ لیں۔٭ نیم گرم پانی کے ساتھ کلونجی قہوے کی طرح پکا کر استعمال کریں۔ اس سے آپ کے پھیپھڑوں کو بھی طاقت ملتی ہے اور کھانسی سمیت سانس اور گلے کے مسائل بھی کنٹرول ہوجاتے ہیں۔٭ سلاد میں بھی اس کے سات دانے پیس کر نمک کے طور پر ڈال کر استعمال کرلیں۔٭ کسی بھی جوس یا شیک میں اس کے سات ہی دانے ڈال لیں۔

 

Check Also

پھٹی ایڑھیاں یا فنگس

پھٹی ایڑھیاں یا فنگس زدہ ناخن، جانیں پاؤں کو تکلیف میں مبتلا کرنے والی 3 مشکلات اور ان کا حل

جسم کے کسی بھی حصے میں ہونے والا درد ہمارے لیے تکلیف کا باعث بنتا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *