والدین، بچوں کوتفریحی انٹرنیٹ ایک گھنٹے سے زیادہ استعمال نہ کرنے دیں،نئی تحقیق

اسلام آباد (پاکستا ن ٹپس  )ایک تحقیق میں والدین اور بچوں کو بتایا گیا ہے کہ وہ انٹر نیٹ ٹیکنالوجی کو اسکول جانے والے دنوں میں ایک گھنٹے تک اور ویک اینڈ (اختتام ہفتہ) پر چار گھنٹے تک استعمال کرسکتے ہیں۔ اس تحقیق میں ٹین ایجر بچوں کے انٹرنیٹ کے استعمال کا جائزہ لیا گیا، جس میں سوشل میڈیا یا تفریحی ویڈیو گیمز شامل تھا۔ محققین نے والدین کو آگاہ کیا کہ اسکول جانے والے دنوں

میں بچوں کو ایک گھنٹے سے زیادہ یہ تفریحی ٹیکنالوجی استعمال نہ کرنے دیں۔یہ تحقیق کمپوٹرز ان ہیومن بیہیویئر نامی جرنل میں شائع ہوئی ہے۔تحقیقی ٹیم کے سربراہ اور اسسٹنٹ پروفیسر، اسکول آف سوشل ورک اینڈ ریسرچ ایسوسی ایٹ، ویوین (وین لی) انتھونی کے مطابق انٹر ایکٹو ٹیکنالوجی زیاہ تر بچوں میں تعلیمی رسائی کے بہترین نتائج کے حصول کے لیے استعمال کیا جانا چاہیے۔کورونا وائرس کی وبا کے دوران تو اسے دور سے بیٹھ کر تعلیم دینے کے لیے اہم سہولت کے طور پر استعمال کیا گیا۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ اسے تفریحی مقصد کے طور پر استعمال کیا گیا جس سے بچوں پر تعلیم کے حوالے سے مضراثرات مرتب ہوئے

Leave a Comment