توبہ توبہ سگی بھتیجی کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے تایہ نےجانوروں کو بھی نہ بخشا

پاکستان ٹپس ! سرائے مغل میں سگے تایا نے 10 سالہ بھتیجی کا زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے متاثرہ بچی نے بتایا کہ تایا کھیتوں میں کام کرنے کے بہانے مجھے ساتھ لے گئے ، جب ہم کھتیوں میں گئے تو انہوں نے کہا کہ کماد سے لکڑی اٹھاسعودی عرب کے بعد ایک اوربڑے عرب ملک نے قطر کےسامنے گھٹنے ٹیک دئیےلاؤ،میرا ہاتھ پکڑ لیا، جب میں نے چیخ وپکار شروع کی تو مجھے گالیاں دینا شروع کر دیں،

اس موقع پر ان کی پوتی بھی موجود تھی جسے انہوں نے کماد میں آنے سے منع کر دیا تھا۔ بچی نے کہا کہ تایا نے مجھے والدین کو بتانے پر دھمکیاں دیں۔مجھ پر تشدد کرتے ہوئے کہا کہ والدین کو بتایا میں تمہاری ماں پر تشدد کروں گا۔بعدازاں والدہ کو تمام صورتحال سے متعلق بتایا۔ جب والدہ کو بتایا تو انہوں نے اگلے روز ہی پولیس کو اطلاع دی۔متاثرہ بچی کے والد کا کہنا ہے کہ میرے بھائی کے دو مجھے فوت ہو گئے ہیں،ان کا ایک بیٹا ہے ، میں اس بات پر بہت دکھی ہوتا تھا۔ میرے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ وہ میرے بیٹی کے ساتھ کوئی غلط کام کر سکتے ہیں،بیٹی نے ڈرتے ڈرتے والدہ کو معاملے کا بتایا تو میری بیوی نے کہا کہ آپ کے بھائی نے ہماری بیٹی کی زندگی تباہ کر دی۔پوری رات سوچتا رہا کہ کیا کروں اور کیا نہیں،آخرکار پولیس کو بتانے

کا فیصلہ کیا اور بچی کا میڈیکل کروایا۔پولیس کو کہا کہ میرے بھائی کو میری آنکھوں کے سامنے نہیں لانا، میرا ،مطالبہ ہے کہ اسے پھانسی دی جائے۔ متاثرہ بچی کی والدہ کا کہنا ہے کہ وہ بہت غلط شخص تھا، اپنی بہن کے ساتھ زیادتی کر کے بھی مار دیا۔یہ جانوروں کے ساتھ بھی زیادتی کرتا رہا۔جب جانوروں سے زیادتی کرتا تھا تو بھائیوں نے روکا اور اپنی بھتیجی کو بھی نہ بخشا۔اگر اس کے بھائی بھی معاف کر بھی دیں تو بھی میں اسے معاف نہیں کروں گی۔

Leave a Comment