مردانہ کمزوری کا شرطیہ علاج بغیر کسی حکیمی دوائی کے نامرد بھی مرد بن جائے،مزید جانیں

! ڈیلی نیوز! آج جس مرض پر بات کرنے لگے ہیں وہ بہت ہی اہم اور سینٹو مرض ہے۔ اگر اس کا بروقت علاج نہ کیا جائے تو وہ معاشرے میں اپنے وجود کو کھو دیتا ہے۔ چاہے وہ معاشرہ ہو یا عورت کے سامنے ہو۔ تو اس مرض کو نامردی کہتے ہیں۔ مردانہ جو قوت ہوتی ہے اس قوت حیات بھی کہتے ہیں۔ یہ مرض چاہے وہ مرد ہو، نوجوان ہو اس کی کل زندگی کا سرمایہ یہی ہوتا ہے۔ جو مردانہ قوت ہوتی ہے۔

شادی شدہ ہوں، نوجوان ہوں، یاکوئی بھی ہو وہ مردانہ کمزو ر ی کا شکا ر ہوتے ہیں۔ اور یہ آہستہ آہستہ عورت کے قابل نہیں رہتے ۔ یعنی کہ یہ نامردی کا شکا ر ہوجاتےہیں۔ اورآہستہ آہستہ بالکل نامرد ہوجاتےہیں۔ اس کی تین اقسام ہیں جو پہلی اقسام ہے وہ حقیقی نامردی ہے۔ اور دوسری جو ہے وہ نفسیاتی نامردی ہے۔ اور جو تیسر ی ہے وہ فزیکل نامردی ہے۔ پہلی قسم میں، جو بچے ماں کے پیٹ میں پیدا ہوتے ہیں۔ ان کے ٹیسٹوران ہوتے ہیں وہ اچھی طرح سے کام نہیں کرتے ۔ ان کا عضوتناسل نہ ہونے کے برابر ہوتاہے۔ وہ حقیقی نامردی ہوتی ہے۔ اس کا بالکل علاج نہیں ہوتاہے۔ جو ذہنی نامردی ہوتی ہے اس میں جو لڑکے ہاتھ سے خود کو بہت زیادہ فارغ کرتے ہیں۔ یا برے کام کرتے ہیں یا اغلام بازی کر لیتے ہیں۔

جس کو جنس پرستی کہتےہیں۔ تو وہ شادی پر آکر بہت ذہنی دباؤ کا شکا ر ہوجاتے ہیں۔ جو تیسری فزیکل نامردی ہوتی ہے اس میں لڑکے بالکل نامرد ہوچکے ہوتے ہیں۔ یعنی اپنے برے کاموں کی وجہ سے وہ اس قسم کی نامردی کا شکا ر ہوجاتےہیں۔ اس میں ان کے رگیں اورپٹھے بالکل کمزور ہوجاتے ہیں۔ وہ ذہنی طور پر اور جسمانی طورپر بھی کمزور ہوجاتےہیں۔ جس کی وجہ سے یہ نامرد ہوجاتےہیں۔ جو لوگ تمباکو نوشی کرتےہیں۔ وہ بھی آہستہ آہستہ نامردی کا شکا ر ہوجاتے ہیں۔ یعنی جو کچی عمر میں اس کا شکا رہوجاتےہیں۔ ان کو نامردی کا مرض لاحق ہو جاتا ہے۔ تو اس میں جسم کے اندر بہت سی پیچیدگیاں پیدا ہوتی ہیں جس کے اندر وہ شادی کے قابل نہیں رہتاہے۔ جو عورت ہے اس کو تسکین نہیں دے سکتے ۔

تو وہ شادی سے بہت زیادہ ڈر جاتےہیں ۔ ان کے نفس کے اندر وینز بلاک ہوجاتی ہیں۔ ان میں خ ون کا پریشر ٹھیک طرح سے نہیں جاتا ہے۔ جس کی وجہ سے ان کو مسئلہ ہوجاتاہے۔ اس نفس کے اندر یاپٹھے ہوتے ہیں ان کے اندر جو خ ون آتا ہے ان کے خ ون کے اندر پریشر ڈالتا ہے۔ جس کی وجہ سے یہ پھولنا شروع ہوجاتےہیں۔ اس کےلیے جو پہلی میڈیسن ڈامیانا کیوب لینی ہے۔ اور دوسری میڈیسن ہے ایسڈ فولز ہے۔ یہ بھی کیوب مقدار میں لینی ہے۔ اس کے ساتھ تیسری میڈیسن ایونا سٹئیوا ہے۔ یہ میڈیسن جو آپ کے اعصاب بہت زیادہ کمزور ہیں۔ اس کے لیے یہ میڈیسن بہت ہی فائدہ مند ہے۔ آپ نے ٹھنڈی چیزوں کا زیادہ استعمال کرنا ہے جو جوشیلی چیزیں ہیں جیسا کہ گوشت وغیر ہ یعنی میڈیسن کے استعمال کے دوران ان گرم چیزوں کا استعمال بالکل نہیں کرنا ہے۔ اور ٹھنڈی چیزوں کاا ستعمال زیادہ کرنا ہے۔خود لذتی کو اپنے اوپر غالب نہیں

اپنی رائے کا اظہار کریں