ذوالحجہ کی پہلی رات کی دُعا ۔ پچس سالہ عبادت کے برابر ثواب۔

ذوالحجہ

پاکستان ٹپس !  میرے دوستو میرے بھائیو میری بہنو ہم آپ کو ایک ایسا عمل بتائیں گے جو کہ آپ نے ذی الحجہ کی پہلی رات کو کرنا ہے جس کے کرنے سے انشاء اللہ پچس سالہ عبادت کا ثواب ملتا ہے تذکرۃ الو اعظین میں لکھا ہے کہ جو شخص ماہِ ذی الحجہ کی پہلی تاریخ کی رات ( یعنی جس رات چاند نظر آ ئے ) کو چار رکعت نمازِ نفل پڑھے اور ہر رکعت میں سورۃ فاتحہ کے بعد سورۃ اخلاص پچس مر تبہ پڑھے اللہ تعالیٰ اس کے اعمال نامہ میں پچس برس

کی عبادت کا ثواب درج فر ما ئے گا اور وہ مرنے سے پہلے بہشت میں اپنا مقام دیکھ لے گا۔ ذوالحجہ کے شروع کے دس دنوں کی عباد ت کی شریعتِ مطہرہ میں بڑی فضیلت واردہوئی ہے:اللہ رب العزت نے سورہ فجر میں کئی چیزوں کی قسم اٹھائی، جن میں سے ایک {ولیالٍ عشر}ہے، جس کے بارے میں خود رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:ان دس راتوں سے مراد ذوالحجہ کا پہلا عشرہ ہے۔حضرت عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: ”کوئی دن ایسا نہیں ہے کہ جس میں نیک عمل اللہ تعالیٰ کے یہاں اِن(ذی الحجہ کے)دس دنوں کے نیک عمل سے زیادہ محبوب ہو اور پسندیدہ ہو،صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے عرض کیا:یارسول اللہ! کیا یہ اللہ کے راستے میں جہاد کرنے سے بھی بڑھ کر ہے؟آپ ﷺ نے ارشاد فرمایا:

”اللہ کے راستے میں جہاد کرنے سے بھی بڑھ کر ہے، مگر وہ شخص جو جان اور مال لے کراللہ کے راستے میں نکلے،پھر ان میں سے کوئی چیز بھی واپس لے کر نہ آئے۔“(سب اللہ کے راستے میں قربان کردے ،اور شہید ہو جائے یہ ان دنوں کے نیک عمل سے بھی بڑھ کر ہے)۔حضرت عبداللہ بن عمررضی اللہ عنھماسے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی الله علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: ”اللہ تعالیٰ کے یہاں(ذو الحجہ کے)دس دنوں کی عبادت سے بڑھ کرعظیم اور محبوب ترکوئی عبادت نہیں؛ لہٰذاان میں”لاالہ الا اللّٰہ ،اللّٰہ اکبر،الحمد للّٰہ“ کثرت سے پڑھا کرو۔ (احمد،بیہقی)عید الاضحی کے دن سے پہلے نو دن روزے رکھنا بھی باعثِ ثواب ہے، حدیثِ مبارک میں ان میں سے ہردن کے روزے کو اجر میں ایک سال کے روزوں کے برابر قرار دیا گیا ہے، نیز خاص عرفہ (نو ذوالحجہ)

کے روزے کے بارے میں آں حضرتﷺ نے ارشاد فرمایا کہ یہ گزشتہ ایک سال اور آئندہ ایک سال کے گناہوں کی معافی کا ذریعہ ہے۔ اور ذوالحجہ کے پہلے عشرے کی ہر رات عبادت کا ثواب لیلۃ القدر کی عبادت کے برابر ہے۔ ویسے تو ہر اسلامی ماہ میں عبادت کرنے کا ثواب ہے ۔ لیکن اس ماہ میں عبادت کرنے کا ثواب ذرا الگ سے ہی ہے۔ تو ہمیں چاہیے کہ ہم اس ماہ میں زیادہ سے زیادہ عبادات کر یں تا کہ ہماری زندگی جو ہے وہ پر سکون ہو سکے اور اس کے ساتھ ساتھ ہمیں ڈھیروں ثواب بھی مل سکے۔ اللہ پاک ہمیں اچھے اعمال کی توفیق عطا فر ما ئے۔

Leave a Comment